‘Fake doctor’ Aamir Liaquat- finally confesses his crime before FIA
آخر کار ‘جعلی ڈاکٹر’ عامر لیاقت نے ایف آئی اے کے سامنےاعترافِ جرم کر لیا

اردو کیلئے یہاں کلک کریں

By Sarmad Ali

Islamabad (Pakdestiny.com) ‘Dr’ Aamir Liaquat Hussain has turned out to be a ‘big lair’ as he confessed to the Federal Investigation Agency that he had ‘purchased’ fake doctorate degrees from Axact.
Earlier, the fake doctor had declared to sue the ARY for maligning him in a ‘false scandal’. The ARY Reporter Asad Kheral has exposed Aamir Liaquat in a way that if any honesty is left in him he should apologize from the nation and seek forgiveness from Allaha Almighty for committing a sin of hiding his wrongdoing willfully for years. He always kept lying that he never acquired fake degree. What a characterless guy he is and our leading media group is presenting him as a ‘great Islamic scholar’. — what a shame…
Who will lay hand on this ‘fake doctor’? Perhaps Interior Minister Chaudhry Nisar who was very active to send FIA to nab Axact/BOL offices to arrest their owners on fake degree scam on the story of NYT. Will he do the same on ARY story?
The Jang/Geo group did one moral thing that at least it had cut ‘doctor’ from the name of this lair. But this media group could not boot out this madari as he earns a lot of money for the channel. – Pak Destiny

 

سرمد علی  سے

اسلام آباد – پاک ڈیسٹنی ڈاٹ کوم –  ‘ڈاکٹر’ عامر لیاقت حسین کا ایک اور بڑا جھوٹ پکڑا گیا ۔ ‘ڈاکٹر’ عامر لیاقت حسین نے  وفاقی تحقیقاتی ادارے  ایف آئی اے کہ سامنے اعترافِ کر لیا کہ اس نے ایگزیکٹ سے جعلی ڈاکٹریٹ کی ڈگری خریدی ۔

اس سے قبل ایک ‘جھوٹے اسکینڈل’ میں اسے بدنام کرنے  پر اس ‘جعلی ڈاکٹر’ نے اے ار وائی پر پر مقدمہ کرنے کا اعلان کیا تھا –  اے ار وائی کے اسد کھرل نے گزشتہ دنوں عامر لیاقت کا پردہ فاش کیا تھا جس کی وجہ سے اگر عامر لیاقت میں تھوڑی سی بھی ایمانداری اور غیرت باقی ھے تو اسے برسوں سے جان بوجھ کر اپنا یہ جھوٹ چھپانے پر اللّہ کے حضور معافی کا طلبگار ھونا چاہیے جبکہ اس نے ہمیشہ یہ جھوٹ بولا کے اس نے کبھی کہیں سے جعلی ڈگری نہیں لی۔ کتنی شرم کی بات ہے کہ ایک ایسے آدمی کو ہمارا ایک معروف میڈیا گروپ کس طرح ایک ‘عظیم اسلامی دانشور’ کے طور پر پیش کرتا ھے۔

اب سوال یہ ھے کہ کون اس کی ‘جعلی ڈاکٹر’ پر ھاتھ ڈالے گا؟ شائید وزیر داخلہ چوہدری نثار جنہوں نے اس جعلی ڈگری اسکینڈل میں  بہت فعال کردار ادا کیا اورنیویارک ٹائیمز کی خبر پر فوری نوٹس لیا اور  ایگزیکٹ/ بول کے مالکان کو گرفتار کرنے کے لئے  ایف آئی اے کو بھیجا کیا اب وہ  اے ار وائی کی اس خبر پر ایکشن لیں گے؟ اب یہ وقت ھی بتائے گا۔

بہرکیف  جنگ / جیو گروپ نے  کم از کم  ایک اخلاقی کام کیا کہ اس کے نام سے ‘ڈاکٹر’ ہٹا دیا مگر کیا وہ اس کو چینل سے باہر بھی کرے گا؟ شاید نہیں کیونگہ یہ ‘مداری’ اس چینل کا ایک بڑا کماو پوت جو ٹہرا- پاک ڈیسٹنی ڈاٹ کوم

Watch Video of ARY on his fake degree

  • Your Opinion is Valuable

    Popular Posts