fbpx

Maryam’s expensive comments on Afghan situation sets herself against establishment

Maryam's expensive comments on Afghan situation sets herself against establishment

By Irum Saleem

Maryam Nawaz‘s explosive comments on Afghan situation has completely pitched her against the establishment.

On Wednesday the daughter of self exiled PMLN leader Nawaz Sharif blasted the PTI government for its Afghan policy.
“Pakistan must accept the will of the Afghan people and refrain from imposing its decision on Afghanistan.

Maryam suggested that Pakistan collaborate with the international community for rehabilitating people and rebuilding infrastructure in the war-torn country. “Pakistan must not interfere in the internal matters of the neighbouring country'” she said.
On social media the debate ensues that Maryam targeted the country’s establishment on the matter.

One Asif writes on Twitter wall “‏‎پہلے خود بھاگی، پھر باپ بھاگ گیا اور اب وکیل بھی بھاگ گیا۔
انہوں نے اپنی بھاگ چور بھاگ لگائی ہوئی۔
ویسے بھی کون سفید جھوٹ کی پیروی کر سکتا، ہاں پٹواریوں کی بات الگ ہے

PTI suppressing rivals

On the local front, Maryam accused the PTI government of suppressing rival political parties, saying “the game of targeting your opponents”.

Irfan says: “‏‎‎سخت قوانین بنائیں ملک
دشمنوں کو پٹہ ڈالیں بہت ہوگیا
فیک نیوز اور ملک دشمن
بیانیہ چوروں اور ملک دشمنوں
کو ڈھیل مت دیں ان کو پکڑیں
کابھی کچھ
کریں چور ڈاکوضمانتیں لے رہے ہیں
اور آئین میں ترمیم کروا کے
ججوں کو پابند بنائیں چھ ماہ
میں کیس کا فیصلہ لازمی کیا جائے”

Rao Sohail said: “‏‎کاش کہ یہی بیان امریکہ کے ہوتے ہوئے بھی دیا ہوتا ،جب پاکستان طالبان کے خلاف امریکہ کا ساتھ دے رہا تھا ،
جب کہتی کہ پاکستان کو امریکہ کی مدد کرنے سے دور رہنا چاہیے ، تو اچھا ہوتا ، اس وقت صرف ایک ہی مرد نے بات کی تھی ، منور حسن نے ،”.

Ali said: “‏‎یہ اس باپ کی بیٹی ہے حملہ انڈین پٹھان کوٹ میں ھوا
اسکے باپ نے مقدمہ گوجرانولہ میں درج کروایا پاکستان اور ایجنسیوں کو بدنام کیا
انڈیاکی تفتیشی ٹیم کو پاکستان کے ھونے کے ثبوت نہیں ملے.”

Let’s see if Maryam softens her stance against the establishment vto come to power. PAK DESTINY

Leave a Reply